پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائن (پی آئی اے) نے کورونا وائرس کے پیش نظر قطر کے بعد اٹلی کے لیے بھی اپنی پروازیں عارضی طور پر معطل کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پی آئی اے کے ترجمان عبداللہ حفیظ کا ایک بیان میں کہنا تھا کہ قومی ایئرلائن کی جانب سے 31 مارچ تک میلان آنے اور جانے والے اپنے فلائٹ آپریشن کو عارضی طور پر معطل کردیا۔

تاہم ترجمان کا کہنا تھا کہ وہ مسافر جو کسی بھی یورپین ملک کے شہری ہیں وہ پی آئی اے کی پروازوں کے ذریعے پیرس کا سفر کرسکتے ہیں۔

 

انہوں نے کہا کہ پیرس پہنچنے کے بعد مسافروں کو اپنے اگے کی منزل کا خود سے انتظام کرنا ہوگا، ساتھ ہی یہ بھی کہا کہ وہ مسافر جنہوں نے میلان سے پاکستان کے لیے اپنی نشستیں بک کروائی ہیں انہیں پی آئی اے کی پرواز کے لیے خود سے پیرس تک آنا ہوگا۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ وہ مسافر جو پیرس سفر کرنے کے خواہاں ہیں انہیں یہ بیاں حلفی دینا ہوگا کہ وہ پی آئی اے سے کسی سہولت کا نہیں کہیں گے۔

جس کے بعد ایسے مسافر جو پاکستان سے پیرس جانا چاہیں گے انہیں بورڈنگ کارڈ جاری کیا جائے گا۔

تاہم ساتھ ہی یہ واضح کیا گیا کہ وہ مسافر جن کے پاس کسی یورپی ملک کی شہریت نہیں ہے یا اس کے پاس رہائشی پرمٹ یا سیاحتی ویزا یا کوئی دیگر سفری دستاویز ہے تو وہ میلان کے لیے سفر نہیں کرسکے گا۔

علاوہ ازیں جو لوگ پیرس سفر نہیں کرنا چاہتے وہ بغیر کسی چارجز کے ٹکٹ ریفنڈ حاصل کرسکیں گے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ پی آئی اے کے دفاتر اپنے صارفین کو سہولت فراہم کر رہے ہیں جبکہ ایئرلائن پروازوں کی معطلی کے باعث پیش آنے والی مشکلات پر معذرت خواہ ہے۔

واضح رہے کہ کورونا وائرس کے پھیلنے کے خطرے کے پیش نظر پی آئی اے ایران اور قطر کے لیے پروازوں کو پہلے ہی منسوخ کرچکی ہے۔

یاد رہے کہ چین سے شروع ہونے والا نوول کورونا وائرس دنیا کے بیشتر ممالک میں پھیل چکا ہے اور اس سے متاثرہ افراد کی تعداد میں دن بدن اضافہ ہوتا جارہا ہے۔

Images Collected from Internet